Subscribe Us

Breaking

Thursday, February 24, 2022

روس نے کیا یوکرین پر شدید حملہ


روس نے یوکرین پر حملہ کردیا ہے روس اور یوکرین میں

 بہت دنوں سے شدید تناؤ کی کیفیت چل رہی تھی لیکن آج روس نے یوکرین پر حملہ کر دیا ہے اس حملے کو عالمی سطح پر بہت زیادہ تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اس حملے کے نتیجے میں عالمی سطح پر بہت سے اثرات مرتب ہوں گے چاہے وہ کوئی بھی شعبہ ہو ہو اس پر اس جنگ کے بہت زیادہ اثرات نمایاں ہوں گے۔ تمام عالمی رہنماؤں نے روس کے اس قدم کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے اور کہا ہے کہ اس مسئلے کو بات چیت کے ذریعے سے حل کرنا چاہیے۔ ہم آپ کو بتاتے چلیں کہ روس اور یوکرین کے درمیان تنازعات کافی عرصے سے چل رہے تھے روسیوکرین کو نیٹو میں شمولیت سے منع کر رہا ہے اور اس کے علاوہ روسی سرحد کے ساتھ کچھ علاقے بھی روس اپنے ساتھ شامل کرنا چاہتا ہے جس کی وجہ سے روس اور یوکرین میں کافی دیر سے تنازعہ چل رہا ہے آج روس کے صدر ولادی میر پیوٹن نے اپنی افواج کو حملہ کرنے کی اجازت دے دی ہے جس کے بعد روسی افواج نے یوکرین پر حملہ کر دیا ہے یوکرین نے بھی ملک میں ایمرجنسی نافذ کر دی ہے۔
یوکرین نے بیان جاری کیا ہے کہ روس کی مسلح افواج نے ملک کی مشرقی سرحد پر گولہ باری شروع کر دی ہے بیان میں کہا گیا ہے کہ روس نے یوکرین کے مختلف ہوائی اڈوں پر بھی گولہ باری کی ہے۔یوکرین کی فضائیہ روسی حملے کو پسپہ کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔
روس کے اس حملے کے عالمی منڈی پر بہت زیادہ اثرات نمایاں ہو رہے ہیں جیسے ہی اس حملے کی خبر ملی اس حملے سے پہلے بھی عالمی مارکیٹ شدید دباؤ کا شکار تھی اس حملے کے ساتھ ہی اسٹاک مارکیٹ تیزی کے ساتھ نیچے آئی ہے اس کے ساتھ کرپٹو کرنسیز کی قیمتیں بھی بہت تیزی کے ساتھ نیچے آئی ہیں بٹ کوائن نے بھی تیزی سے کریش کرنا شروع کر دیا ہے اس کے ساتھ ساتھ تیل کی قیمتوں میں بھی مزید اضافہ ہونے کا امکان موجود ہے۔
عالمی رہنماؤں کی مداخلت کے باعث اگر روس اور ہوکرین میں بات چیت کے ذریعے مسائل حل ہو جائیں تو امید ہے کہ حالت ٹھیک ہو جائیں گے ورنہ پوری دنیا پر اس جنگ کے شدید اثرات مرتب ہوں گے آنے والے دنوں میں یہ اونٹ کس کروٹ بیٹھتا ہے ہم آپ کو آگاہ کرتے رہیں گے۔

No comments:

Post a Comment